یو اے ای سے آئل ریفائنریز پر معاملات طے

وزیراعظم کا توازن ادائیگی کیلئے 3 ارب ڈالر کی سپورٹ پر ولی عہد کا شکریہ،اعلامیہ


ویب ڈیسک |06 جنوری ، 2019

اسلام آباد: متحدہ عرب امارات کے ولی عہد شیخ محمد بن زید النہیان پاکستان کے مختصر دورے کے بعد واپس روانہ ہوگئے۔
اماراتی ولی عہد کے دورے کے بعد سرکاری ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ یو اے ای 3 بلین ڈالر پہلے اعلان کرچکا ہے، آج آئل ریفائنریز پر بات فائنل ہوئی ہے اور باقی معاملات پر بھی بات چیت فائنل ہوگئی ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے توازن ادائیگی کیلئے 3 ارب ڈالر کی سپورٹ پر ولی عہد کا شکریہ ادا کیا۔
ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النیہان کے دورہ پاکستان کا اعلامیہ جاری کیا گیا ہے جس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی دعوت پر ولی عہد نے پاکستان کا دورہ کیا جہاں کابینہ ارکان سمیت دیگر اہم شخصیات بھی ولی عہد کے ہمراہ تھیں، وزیر اعظم عمران خان نے نور خان ائیربیس پر معزز مہمان کا استقبال کیا۔
اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور ابوظہبی کے ولی عہد کے درمیان ون آن ون ملاقات ہوئی جس میں دونوں رہنماؤں کے درمیان باہمی تعلقات سمیت اہم امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ملاقات میں علاقائی اور عالمی اہمیت کے امور پر بھی تبادلہ خیال کیاگیا۔
اعلامیے کے مطابق ملاقات میں دونوں رہنماؤں نے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے مل کر کوششوں کے عزم کا اعادہ کیا اور افغانستان میں امن کیلئے بھی مل کر کوششوں پر اتفاق کیاگیا۔
اعلامیے کے مطابق پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے درمیان وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے، فریقین نے دفاع اور سلامتی کے شعبوں میں جاری تعاون پر اطمینان کا اظہار کیا۔اعلامیے میں کہاگیا ہے کہ وزیراعظم نے ولی عہد کو مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے آگاہ کیا۔
اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ آئندہ ماہ ابوظہبی میں پاکستان امارات کے وزارتی کمیشن کا اجلاس ہوگا۔
اعلامیے کے مطابق وزیر اعظم نے متحدہ عرب امارات کو سال 2019 کو برداشت کاسال قرار دینے پر مبارکباد بھی دی۔
اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے توازن ادائیگی کیلئے 3 ارب ڈالر کی سپورٹ پر ولی عہد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ متحدہ عرب امارات کا معاشی تعاون دہائیوں پر مشتمل دوستی کا عکاس ہے۔
قبل ازیںمتحدہ عرب امارات کے ولی عہد کے مختصر دورے کے دوران وزیراعظم عمران خان اور شیخ محمد بن زید النہیان کے درمیان ون آن ون ملاقات ہوئی جس میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان اور شیخ محمد کی سربراہی میں یو اے ای اور پاکستان کے درمیان وفد کی سطح پر مذاکرات بھی ہوئے۔
شیخ محمد بن زید النہیان نورخان ائیر بیس سے واپس روانہ ہوئے جہاں وفاقی وزراء اور اعلیٰ حکام نے انہیں الوداع کیا جب کہ معزز مہمان کو پرنسپل انفارمیشن افسر میاں جہانگیرنے دورےکا البم بھی پیش کیا۔وزیراعظم نے خود گاڑی ڈرائیو کی
اس سے قبل شیخ محمد بن زید النہیان کے طیارے نے نور خان ائیربیس پر لینڈ کیا جہاں معزز مہمان کا ریڈ کارپٹ استقبال کیا گیا اور استقبال کرنے وزیراعظم عمران خان خود ائیرپورٹ پر موجود تھے، انہوں نے مہمان کو خوش آمدید کہا جب کہ اس موقع پر دیگر اعلیٰ حکام بھی ائیرپورٹ پر موجود تھے۔
وزیراعظم عمران خان نور خان ائیربیس سے مہمان کو لے کر روانہ ہوئے اور مہمان کو وزیراعظم ہاؤس لے جانے کے لیےگاڑی میں خود ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھے اور گاڑی چلاکر وزیراعظم ہاؤس پہنچے۔
وزیراعظم ہاؤس پہنچنے پر معزز مہمان کو گارڈ آف آنر پیش کیا گیا، پہلے متحدہ عرب امارات پھر پاکستانی قومی ترانے دھنیں بجائی گئیں جب کہ معزز مہمان کو فوج کے چاق و چوبند دستے نے سلامی دی اور ولی عہد نے گارڈ آف آنر کا معائنہ بھی کیا۔اس موقع پر پاک فضائیہ کے دستے نے بھی معزز مہمان کو سلامی دی۔
وزیراعظم عمران خان نےمہمان کا کابینہ ارکان اور دیگر سے تعارف کرایا جب کہ ولی عہد متحدہ عرب امارات نے بھی اپنے وفد کے ارکان سے وزیراعظم کا تعارف کرایا۔متحدہ عرب امارات کے ولی عہد کی پاکستان آمد کے موقع پر اسلام آباد کو پاکستانی اور یو اے ای کے پرچموں سے سجایا گیا۔متحدہ عرب امارات کے ولی عہد کا یہ 12 سال بعد پاکستان کا دورہ تھا اور تحریک انصاف کی حکومت میں پاکستان اور امارات کی اعلیٰ قیادت کے درمیان 3 ماہ میں ہونے والی یہ تیسری ملاقات ہے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے