فیکٹری ملازمین کے لیے پیشہ وارانہ تحفظ بل لانے کا فیصلہ

سیفٹی اینڈ ہیلتھ ایکٹ سے فیکٹری مزدوروں کو تحفظ ملے گا

ویب ڈیسک|منگل 08جنوری9 201


لاہور: پنجاب حکومت نے فیکٹریوں اور کارخانوں میں کام کرنے والے ملازمین کے لیے پیشہ وارانہ تحفظ صحت بل لانے کا فیصلہ کیا ہے، اس سلسلے میں معلوم ہوا ہے کہ ملازمین کے تحفظ اور صحت کے لیے کمیشن بنایا جائے گا۔
ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت نے فیکٹریوں اورکارخانوں میں کام کرنے والے ملازمین کی فلاح وبہبود کو مدنظر رکھتے ہوئے پیشہ وارانہ تحفظ بل لانے کا فیصلہ کیا ہے، جس کے تحت پنجاب حکومت ان کے لیےسیفٹی اینڈ ہیلتھ ایکٹ بنائے گی۔ بل کے تحت کارخانوں، فیکٹریوں کو بنانے سے پہلے اتھارٹی سے منظوری لینا ہوگی۔ ملازمین کے تحفظ کے لیے ضلعی سطح پر کونسلز بھی بنائی جائیں گی، جس میں حکومت، ملازمین اور مالکان کے نمائندے شامل ہوں گے۔
بل کے تحت مزدوروں کا ہر چھ ماہ بعد طبی معائنہ کرانا ضروری ہوگا۔ جس کے اخراجات مالک یا ادارہ برداشت کرے گا، کسی فیکٹری میں کام کرنے والے ملازم کو حادثے کی صورت میں کونسل کو اطلاع دینا ضروری ہوگا۔
فیکٹری یا کام کرنے کی جگہ پر حادثے کا ریکارڈ رکھنا ضروری ہوگا۔ کسی فیکٹری میں مشینوں کی تبدیلی، نئی مشنیں لگانے کی بھی اجازت لینا ہوگی۔ملازمین کا تحفظ نہ کرنے کی صورت میں قید اور جرمانہ کی سزا بھی دی جاسکے گی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے