بہتر کارکردگی پر اساتذہ کو اعزازیہ دیا جاۓ:ڈپٹی کمشنر

رحیم یارخان ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کا اجلاس

ایجوکیشن رپورٹر|پیر 28جنوری 2019


ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کے اجلاس کی صدارت کررہے ہیں۔فوٹو : ڈی سی فیس بک آفیشل پیج


رحیم یارخان : ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل کی زیر صدارت ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کا اجلاس ہوا جس میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی کے دستیاب اور درکار فنڈز کا جائزہ لیا گیا۔
ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل نے ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے افسران کو ہدایت کی کہ حکومت پنجاب شعبہ تعلیم پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے وسائل فراہم کر رہی ہے ، افسران کی ذمہ داری ہے کہ وہ دستیاب فنڈز اور وسائل کا مکمل ایمانداری کے ساتھ شفاف استعمال یقینی بنائیں۔انہوں نے سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی کو ہدایت کی کہ تمام ڈی اوز اور ڈپٹی ڈی اوز دستیاب فنڈز کے استعمال کے بارے میں ریکارڈ مکمل رکھیں گے اور ہرمہینے اخراجات اور موجودہ فنڈز کا ریکارڈ میٹنگ میں پیش کریں گے۔انہوں نے ہدایت کی کہ افسران ماتحت عملہ کے رحم و کرم پر نہ رہیں اور فنڈز کے بہتر استعمال کے لیے اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں۔
انہوں نے سی ای او ایجوکیشن کو تمام افسران کے بجٹ کے اغراض و مقاصد اور استعمال بارے تربیت فراہم کرنے کے لئے ٹریننگ سیشن کرنے کے بھی احکامات جاری کئے۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ تمام ایجوکیشن افسران ، اے ای اوز اور اساتذہ کو بہتر کارکردگی پر ماہانہ اعزازیہ فراہم کرنے کے اقدمات کئے جائیں جبکہ کوئی بھی افسر از خود اعزازیہ دینے کا مجاز نہیں ہوگا۔ اعزازیہ دینے کے لئے متعلقہ افسران اور ماتحت عملہ کی کارکردگی رپورٹ کمیٹی میں بھجوائی جائے اور کارکردگی کا جائزہ لینے کے بعد اعزازیہ فراہم کیا جائے گا۔
ڈپٹی کمشنر نے کلاس فور کے موسم سرما کے لئے دستیاب فنڈز سے انہیں کپڑے نہ لےکر دینے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ افسران کو شوکاز نوٹس دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ تمام افسران ترجیحی بنیادوں پر کلاس فور کے لئے اعلیٰ کوالٹی کے یونیفارمز کے کپڑے خرید کریں اور کوالٹی کو پہلے چیک کرایا جائے۔انہوں نے ایجوکیشن افسران کے دفاتروں کی بھی فوری مرمت کے لئے فنڈز فراہم کرنے کی ہدایت دی۔
اجلاس میں چاروں تحصیلوں میں موجود سکول فار سپیشل پرسنز کے بجٹ کا بھی جائزہ لیا گیا ۔سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی ملک مختار حسین اور فنانس آفیسر نے ایجوکیشن اتھارٹی کے فنڈز کے بارے میں بریفنگ دی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے