Trending

ضلع رحیم یارخان میں سابقہ شجرکاری مہم کے دوران لگاۓ پودوں کے آڈٹ کا حکم

پودوں کی موجودہ صورت حال کے بارے میں آگاہ کیا جاۓ:ڈپٹی کمشنر

رحیم یارخان (قافلہ نیوز)ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل نے کہا کہ ہر شہری کو چاہیے کہ وہ نہ صرف پودے لگائے بلکہ اس کی حفاظت کا بھی مناسب انتظام یقینی بنائے یہ نہ صرف ہماری قومی بلکہ مذہبی ذمہ داری ہے بھی اور درخت لگانے کو صدقہ جاریہ قرار دیا گیا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گورنمنٹ پائلٹ سیکنڈری سکول میں وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت پر موسم بہار شجر کاری مہم کا پودا لگا کر افتتاح کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ چوہدری طالب حسین رندھاوا، ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز سعدیہ رشید، سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی ملک مختار حسین، ایکسین ہائی ویز محمد کامران اکرم، ڈی او جنگلات امداد حسین ، پرنسپل ادارہ میاں ساجد اکرام سمیت دیگر محکموں کے افسران موجود تھے۔
ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ماضی میں درختوں کا بے دریغ کٹاؤ کیا گیا جس کے باعث آج ہمارے ملک میں درخت آبادی کے تناسب سے کہیں کم ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے ضلع کو آئندہ دو ماہ میں سرسبز و شاداب بنانا ہے ۔رحیم یار خان سمیت ضلع بھر میں تمام خالی سرکاری جگہوں پر شجر کاری کی جائے گی جس کے لئے میونسپل کمیٹیز، ضلع کونسل اور یونین کونسلز کے سیکرٹریز کو ذمہ داریاں تفویض کی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ ہر شخص کو چاہیے کہ وہ اپنے حصے کا پودا لگائے اور اس کی حفاظت کا مناسب بندوبست بھی کرے۔انہوں نے کہا کہ شجر کاری مہم میں ضلع میں 4لاکھ50ہزار پودے لگانے کا ٹارگٹ ہے مگر ضلعی انتظامیہ اس سے زیادہ پودے لگائے گی۔انہوں نے سول سوسائٹی، میڈیا ، کاروباری تنظیموں سمیت دیگر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے شخصیات کو بھی شجر کاری مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کی تلقین کی۔بعد ازاں ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل نے ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ کے ہمراہ شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ بھی کیا۔

قبل ازیں ڈپٹی کمشنر جمیل احمد جمیل کی زیر صدارت موسم بہاراں شجر کاری مہم کے آغاز کے لئے انتظامات کا جائزہ لینے کے لئے اجلاس ہوا جس میں ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ چوہدری طالب حسین رندھاوا، ڈی او جنگلات امداد حسین، ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز سعدیہ رشید، سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی ملک مختار حسین سمیت محکمہ زراعت، لائیوسٹاک، انہار، ضلع و میونسپل کمیٹیز کے افسران ، فشریز ودیگر محکموں کے افسران نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ شجر کاری مہم کے سو فیصد نتائج حاصل کئے جائیں گے۔انہوں نے گرین پاکستان مہم کے تحت لگائے جانے والے پودوں کا آڈٹ کرانے کے بھی احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ سابقہ شجر کاری مہم میں محکموں کی جانب سے لگائے جانے والے پودوں کا آڈٹ کرایا جائے اور ان کی موجودہ صورت حال کے بارے میں آگاہ کیا جائے۔

انہوں نے محکمہ ڈی او جنگلات کو ہدایت کی کہ وہ پودوں کی مزید اقسام متعارف کرائیں اس سلسلہ میں وہ اپنی محکمانہ کوششوں میں تیزی لائیں جبکہ تمام ترقیاتی منصوبوں میں شجر کاری کے لئے مختص بجٹ کا ایک فیصد شفاف انداز میں استعمال میں لایا جائے جس کے لئے ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ محکمہ جنگلات کی معاونت و مانیٹرنگ کریں۔انہوں نے سی ای او ایجوکیشن ملک مختار حسین کو ہدا یت کی کہ وہ اے ای اوز کے ذریعے شجر کاری مہم کی مانیٹرنگ یقینی بنائیں جبکہ سکولوں میں پودے لگانے اور ان کی آبیاری کا مکمل پلان مرتب کریں۔

Show More

One Comment

  1. سرکاری شجرکاری میں صرف سکولوں میں کافی حد تک مثبت طریقے سے شجرکاری کی جاتی ہے باقی سارا اعداد وشمارکاگورکھ دھندہ اور شجرکاری کی آڑ میں لوٹ مار ہے۔ سب سے زیادہ بدیانتی محکمہ جنگلات کرتا ہے۔ شجرکاری کی ٹائم لائن تصاویر کے ذریعے آڈٹ ممکن ہے۔ ہر پودے کا ہر ہفتے فوٹو کھینچ کر مطلقہ اتھارٹی کوبھجوایا جائے اور سال بھر کی نگہداشت کا جائیزہ لیا جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے