بچوں کو انسداد پولیو قطرے نہ پلانے پر اداکار فواد کیخلاف مقدمہ درج

ویب ڈیسک : 20 فروری 2019

لاہور کی ضلعی انتظامیہ نے معروف اداکارہ فواد خان کے خلاف ایف آئی آر درج کروا دی ہے۔
ضلعی انتظامیہ نے فواد خان سمیت 6 افراد کے خلاف بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے سے انکار پر مقدمہ درج کرایا۔
ان 6 مقدمات میں سے 4 لاہور کے علاقے فیصل ٹاﺅن کے پولیس اسٹیشن میں درج کرائے گئے جبکہ 2 کا اندراج ماڈل ٹاﺅن پولیس اسٹیشن میں ہوا۔پولیو کے قطرے پلوانے سے انکار پر فواد خان کے خلاف ایف آئی آر (جس میں اداکار کی نمائندہ ان کے ڈرائیور قیصر کررہے ہیں) یونین کونسل مانیٹرنگ آفیسر (یو سی ایم او)کی شکایت پر درج کرائی گئی۔
یہ ایف آئی ار پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 269 (زندگی کے لیے خطرناک مرض کے انفیکشن کو پھیلنے کے حوالے سے غفلت)، دفعہ 270 (ایسا اقدام جس سے زندگی کے لیے خطرناک انفیکشن پھیلنے کا خدشہ ہو)، دفعہ 506، دفعہ 186 اور دفعہ 188 کے تحت درج کی گئی۔یو سی ایم او کی جانب سے کی گئی شکایت میں بتایا گیا کہ پولیو ٹیم منگل کی شامل ماڈل ٹاﺅن میں فواد خان کی رہائش گاہ پر گئی، جہاں ایک بچے کو ویکسین دی جانی تھی مگر ‘خاندان کے سربراہ نے بچوں کو انسداد پولیو ویکسین دینے سے انکار کردیا اور پولیو ٹیم کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں’۔
ابھی یہ واضح نہیں کہ ایف آئی آر میں خاندان کے سربراہ سے مراد فواد خان ہیں یا خاندان کا کوئی اور رکن۔
انسداد پولیو پروگرام کے لیے وزیراعظم کے فوکل پرسن بابر بن عطا نے اس حوالے سے بتایا کہ ڈپٹی کمشنر لاہور کے مطابق پولیو ٹیم نے فواد خان کی بیٹی کو ویکسین دینے کی کوشش کی تھی۔
ٹوئٹر پر ایک سوال کے جواب پر بابر بن عطا کا کہنا تھا کہ خاندان کے رکن کے رویے کے بعد فواد خان کے ڈرائیور نے مبینہ طور پر ٹیم کے ساتھ بدتمیزی کا مظاہرہ کیا۔
انہوں نے ٹوئیٹ میں مزید لکھا ‘ فواد خان ہمارا فخر ہیں، میں ان سے درخواست کرتا ہوں کہ بچے کے لیے ٹیموں کو ویکسین کی اجازت دیں، لاہور میں گزشتہ ہفتے ایک پولیو کیس سامنے آیا تھا اور ہمیں بچے کو لازمی تحفظ فراہم کرنا چاہئے’۔
ایک اور ٹوئیٹ میں انہوں نے لکھا کہ یہ والدین کا حق ہے کہ وہ پولیو ویکسینیشن کے بارے میں سوالات کریں اور یہ پولیو حکام کا فرض ہے کہ اس کا جواب دیں ‘مگر کسی کو یہ حق حاصل نہیں وہ اپنے فرائض سرانجام دینے والی ٹیموں کے ساتھ بدسلوکی کرے’۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے