غیر ذمہ دارانہ بیان،وزیراعلی نے فیاض الحسن چوہان سے استعفی لے لیا

ویب ڈیسک | اپ ڈیٹ منگل 05مارچ 2019
لاہور : فیاض الحسن چوہان کو ہندو برادری سے متعلق متنازع بیان دینا مہنگا پڑ گیا، وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے صوبائی وزیراطلاعات فیاض الحسن چوہان سے استعفیٰ لے لیا۔سید صمصام بخاری کو وزیراطلاعات و ثقافت بناۓ جانے کا امکان ہے۔
تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ہندو برادری سے متعلق متنازع بیان دینے پر صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان سے استعفیٰ لے لیا،ایوان وزیر اعلیٰ نے بتایا ہے کہ فیاض الحسن چوہان کو ایوان وزیراعلیٰ بلا کر استعفیٰ دینے کے لیے کہا گیا تھا،اس سے قبل بھی فیاض الحسن چوہان کو خبردار کیا گیا تھاکہ کسی کی ذات، مذہب یا فرقہ واریت پر مبنیٰ کوئی ایسا بیان نہ دیا جائے جس سے کسی کے جذبات مجروح ہوں۔
واضح رہے کہ گزشتہ روز وزیراطلاعات فیاض الحسن چوہان نے ہندو برادری کے خلاف بیان دیا تھا، جس کی انہوں نے وضاحت بھی کی، ان کا کہنا تھاکہ اپنے بیان میں پاکستان میں مقیم ہندوؤں کو نہیں بلکہ مودی اور بھارتی فوج کو مخاطب کیا تھا، اگر ان کے بیان سے ہندو برادری کی دل آزاری ہوئی تو وہ معذرت خواہ ہیں۔
ادھر وزیراعظم عمران خان نے صمصام بخاری کو وزیر اطلاعات بنانے کی منظوری دی، اسی سلسلے میں صمصام بخاری کی وزیراعلیٰ پنجاب سے گورنر ہاؤس ملاقات بھی ہوئی۔ صمصام بخاری کی حلف برداری تقریب کل بدھ کے روز گورنر ہاؤس میں ہوگی جہاں گورنر پنجاب چودھری محمد سرور ان سے حلف لیں گے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے