جنوبی پنجاب میں دہشت کی علامت بوسن گینگ کا سرغنہ گرفتار

ویب ڈیسک | ہفتہ 13اپریل 2019

راجن پور : جنوبی پنجاب میں دہشت کی علامت بوسن گینگ کے بانی عبدالمجید عرف مجیدابوسن کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔بتایا جاتا ہے کہ 2002میں بوسن گینگ کی بنیاد رکھنے والا عبدالمجید عرف مجیدا بوسن راجن پور پولیس کے قابو میں آگیا۔پکڑا جانے والا ملزم 64مقدمات میں مطلوب تھا۔تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کی ہدایات پرایس ڈی پی او مجاہد خان برمانی کی سربراہی میں پولیس ٹیم نے خطرناک ملزم عبدالمجید عرف مجیدا بوسن ولد غلام قادر کو گرفتار کر لیا ہے۔مذکورہ ملزم کے سر کی قیمت 30لاکھ مقرر کرنے کی سفارشات بھی متعلقہ محکمہ کو بھجوا دی گئی ہیں ۔مزید ملزم 7اے ٹی اے ،قتل،ڈکیتی،رہزنی اور اقدام قتل جیسے جرائم کے64مقدمات میں راجن پور پولیس سمیت دیگر اضلاع کی پولیس کو بھی مطلوب تھا۔ ملزم علاقے میں خوف کی علامت سمجھے جانے والے بوسن گینگ کا سرغنہ تھا اس کے کچہ کے علاقہ میں سکھانی اور لنڈ گینگ سے بھی روابط تھے اور انہیں اسلحہ سپلاٸی بھی کرتا تھا ۔
ڈی پی او راجن پور کے مطابق حالیہ کچہ آپریشن سے قبل ملزم کچہ کے علاقہ سے نکل آیا تھا جبکہ آپریشن کے دوران کچہ کے علاقہ سے فرار ہونے والے ڈاکوؤں کو پناہ بھی دیتا تھا۔ڈی پی او نے مزید کہا کہ آٸی جی پنجاب کی ہدایات پر عمل کرتے ہوٸے کچہ سمیت ضلع بھر میں امن کا قیام یقینی بنایا جاٸے گا ۔پولیس عوام کی جان و مال کی محافظ بن کر اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔ اس موقع پر ڈی ایس پی ،ایس ایچ او ،سب انسپکٹر سمیت دیگر بھی موجود تھے۔ ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ہارون رشید نے کامیاب کارواٸی پر ملازمان و پولیس افسران کی کارکردگی کو سراہتے ہوٸے تعریفی سرٹیفکیٹ اور انعامات دینے کا اعلان بھی کیا۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے