کپتان نے اپنی ٹیم تبدیل کرلی،کئی بڑے کھلاڑی باہر

ویب ڈیسک | جمعرات18اپریل2019

اسلام آباد: حکومت نے وفاقی کابینہ میں بڑی تبدیلیاں کرتے ہوئے فواد چوہدری سمیت متعدد وزرا کے قلمدان تبدیل کردیئے۔
وزیراعظم ہاؤس کے مطابق فواد چوہدری سے اطلاعات و نشریات کی وزارت واپس لے کر انہیں سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا وزیر بنا دیا گیا۔
اس کے علاوہ غلام سرور کو وفاقی وزیر ہوا بازی کا قلمدان سونپا گیا ہے، اس سے قبل ان کے پاس وزارت پیٹرولیم کا قلمدان تھا جبکہ اعجاز احمد شاہ کو وفاقی وزیر داخلہ مقرر کیا گیا ہے۔
خیال رہے کہ گزشتہ سال انتخابات میں کامیابی کے بعد پہلی مرتبہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت نے وزیر داخلہ مقرر کیا ہے۔
علاوہ ازیں شہریار آفریدی کو ریاستی اور سرحدی علاقوں (سیفرون) کا وزیر جبکہ وفاقی وزیر برائے نجکاری محمد میاں سومرو کو ایوی ایشن ڈویژن کا اضافی قلمدان بھی دے دیا گیا۔
اعظم سواتی، جو گزشتہ سال سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی وزارت سے مستعفی ہوگئے تھے، کو وفاقی وزیر برائے پارلیمانی امور جبکہ ڈاکٹر حفیظ شیخ کو مشیر خزانہ مقرر کردیا گیا۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق فردوس عاشق اعوان کو وزیر اطلاعات و نشریات کا قلمدان سونپا گیا ہے۔
مذکورہ اعلان سے کچھ دیر قبل فواد چوہدری نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا تھا کہ وزیر اعظم نے کابینہ میں تبدیلیوں کا فیصلہ کیا ہے اور وزیر اعظم آفس تبدیلیوں سے متعلق اعلان کرے گا۔
یہ بھی یاد رہے کہ کابینہ میں تبدیلی ایسے وقت میں کی گئی ہے جب کچھ ہی گھنٹے قبل وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے اپنے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا تھا۔
اسد عمر نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان کابینہ میں ردوبدل کے نتیجے میں چاہتے ہیں کہ میں وزارت خزانہ کی جگہ توانائی کا قلمدان سنبھال لوں لیکن میں نے فیصلہ کیا ہے کہ میں کابینہ میں کوئی بھی عہدہ نہیں لوں گا۔
انہوں نے کہا کہ میرا ماننا ہے کہ عمران خان پاکستان کی واحد امید ہیں اور انشااللہ نیا پاکستان ضرور بنے گا۔
یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسد عمر کی جانب سے یہ فیصلہ ایک ایسے موقع پر کیا گیا ہے جب گزشتہ ہفتے ہی وہ انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) سے بیل آؤٹ پیکج پر گفتگو کے لیے واشنگٹن گئے تھے اور ان کی وہاں عالمی بینک کے حکام سے بھی ملاقاتیں ہوئی تھیں۔
تاہم اسی دورے کے دوران ان کو عہدے سے ہٹائے جانے اور کابینہ میں اہم تبدیلیوں کے حوالے سے قیاس آرائیاں شروع ہو گئی تھیں جسے حکومت نے مسترد کردیا تھا۔

نوٹ: یہ ابتدائی رپورٹ ہے

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے