’’حطیم‘‘ میں نوافل ادا کرنے والا خوش نصیب پاکستانی

ویب ڈیسک | بدھ 15مئی 2019

مکہ مکرمہ: مسجد الحرام میں صفائی ستھرائی کے کام پر مامور پاکستانی شہری کو بہترین کارکردگی پیش کرنے پر خادم الحرمین شریفین نے نقد انعام دینے کا اعلان کیا تاہم اُس نے رقم لینے سے انکار کرتے ہوئے ’’حطیم‘‘ میں نماز ادا کرنے کی خواہش پوری کرلی۔
عرب میڈیا رپورٹس کے مطابق خانہ کعبہ میں صفائی ستھرائی کا کام انجام دینے والے پاکستانی کو بہترین کارکردگی پیش کرنے پر مہینے کا بہترین ملازم قرار دیتے ہوئے اُسے انتظامیہ کی طرف سے بھاری رقم بطور انعام دینے کا اعلان کیا گیا۔
رپورٹ کے مطابق پاکستانی شہری نے انعامی رقم لینے سے انکار کرتے ہوئے انتظامیہ سے درخواست کی کہ اُسے پیسے دینے کے بجائےحجر اسماعیل ’’حطیم‘‘ میں نماز پڑھنے کی اجازت دی جائے۔
مسجد الحرام کی انتظامیہ نے پاکستانی شہری کی درخواست کو قبول کرتے ہوئے اُسے حطیم کے احاطے میں نماز پڑھنے کی اجازت دی۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر نوافل ادائیگی کی تصاویر بھی تیزی سے وائرل ہوگئیں۔
تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ خانہ کعبہ کی انتظامیہ نے حطیم کے دروازے بند کررکھے تھے تاکہ پاکستانی شہری اور مسجد الحرام کی خدمت کرنے والا مزدور سکون و اطمینان کے ساتھ نوافل ادا کرسکے۔

He was from Pakistan. In the Kaaba, he was voted the most diligent cleaner of the month. They wanted to reward him money but he refused. Instead, he said he wanted to pray in Hijr-Ismail. The doors were closed, Hijr-Ismail was assigned to him and this image transpired. pic.twitter.com/q9fTrbJpfx

— Kaykhusraw (@undersubscribed) May 13, 2019

عرب میڈیا نے ذرائع سے موصل ہونے والی اطلاعات پر یہ بھی بتایا کہ مہینے میں بہترین کارکردگی دکھانے والے ملازم کو انتظامیہ کی جانب سے تین ہزار سے پانچ ہزار ریال انعام دیا جاتا ہے، مسجد الحرام میں سیکڑوں کی تعداد میں پاکستانی صفائی ستھرائی کا کام کررہے ہیں۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے