ڈالر کی پرواز تھم نہ سکی ،اوپن مارکیٹ میں 150 روپے کی حد عبور کر گیا

ویب ڈیسک : 17مئی 2019
کراچی : مارکیٹ میں آج (جمعہ کو) بھی ڈالر کی پرواز تھم نہ سکی جو اوپن مارکیٹ میں 150 روپے کی حد عبور کر گیا جبکہ انٹربینک میں 149 روپے تک پہنچ گیا۔کاروباری روز کے آغاز پر ہی دونوں مارکیٹس میں ڈالر کی قیمت میں ڈیڑھ روپے اضافہ دیکھنے میں آیا۔انٹربینک میں ڈاکر 149 روپے جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر 150 روپے 15 پیسے پر فروخت ہورہا ہے۔
واضح رہے کہ گزشتہ چند روز سے روپے کی قدر میں مسلسل کمی دکھائی دے رہی ہے جبکہ مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں اس اضافے کی وجہ سے حکومت اور انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) کے ساتھ ہونے والا معاہدہ ہی بتایا جارہا ہے۔
گزشتہ روز اس حوالے سے صدر فوریکس ایسوسی ایشن ملک بوستان نے میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ ڈالر کی قیمت میں اضافے کی بنیادی وجہ روپے کی قدر میں 15 سے 20 فیصد کمی کی افواہیں ہی ہیں۔اسی وجہ سے یومیہ بنیادوں پر روپے کی بے قدری کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے جس کے اثرات حصص مارکیٹ میں بھی دکھائی دے رہے ہیں۔واضح رہے کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) جلد نئی مانیٹری پالیسی جاری کرنے جارہا ہے جس میں شرح سود کے بڑھنے کی خبریں ہیں۔
تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر ڈالر کی پرواز اسی طرح جاری رہی تو آنے والے دنوں میں اس کے منفی اثرات دیگر شعبوں پر بھی دیکھے جاسکیں گے۔
خیال رہے کہ ڈالر میں اضافے کی وجہ سے ملکی قرضوں کا بوجھ بھی روز بروز بڑھ رہا ہے۔تاہم کرنسی ڈیلرز کا کہنا ہے کہ اگر حکومت روپے کی قدر میں کمی کرنے کا ارادہ رکھتی ہے تو اس کا اعلان کرے تاکہ لوگوں کو یہ معلوم ہوجائے کہ ڈالر کی قیمت ایک مخصوص جگہ پر جاکر رک جائے گی۔ڈیلرز یہ بھی کہتے ہیں کہ مارکیٹ کو کُھلا چھوڑنے پر سٹے باز بھی بڑی تعداد میں ڈالرز خریدنے پہنچ جاتے ہیں جس کی وجہ سے مارکیٹ سے ڈالر غائب ہوجاتا ہے۔اس کے علاوہ اس وقت مارکیٹ میں ڈالر کے خریدار موجود ہیں لیکن بیچنے والے موجود نہیں ہیں، جن افراد نے پہلے سے ڈالر خرید کر رکھا ہوا ہے وہ سوچ رہے ہیں کہ شاید ڈالر 160 روپے تک پہنچ سکتا ہے اور اسی وجہ سے وہ ڈالر فروخت نہیں کر رہے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے