بلاول کی افطار ڈپلومیسی:اپوزیشن جماعتیں حکومت کے خلاف اکٹھی ہوگئیں

ویب ڈیسک : 19مئی 2019
اسلام آباد: حکومت کے خلاف اپوزیشن جماعتوں کا محاذ گرم کرنے کی تیاریاں، متحدہ اپوزیشن آج وفاقی دارالحکومت میں سر جوڑ کر بیٹھیں گی۔ ملک کی معاشی صورتحال سمیت اہم امور پر غور ہو گا۔مریم نواز آج بلاول بھٹو کے افطار ڈنر میں سینئر رہنماؤں کے ہمراہ شرکت کریں گی۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے فضل الرحمان، اسفند یار ولی، سراج الحق سمیت دیگر رہنماؤں کو بھی مدعو کیا ہے۔ ،
بتایا گیا ہے کہ اس موقعے پر بلاول بھٹو اور مریم نواز کی ملاقات طے پا گئی ہے۔ دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں بڑے بریک تھرو کا امکان ہے جس سے سیاسی منظر نامے پر ایک ہلچل مچ سکتی ہے۔ ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب نے تصدیق کی ہے۔ مریم نواز کے ساتھ حمزہ شہباز سمیت پارٹی کے سینئر رہنماؤں پر مشتمل وفد افطار ڈنر میں شرکت کرے گا۔افطار ڈنر سے قبل اپوزیشن جماعتوں کا اہم اجلاس ہو گا جس میں حکومت کے خلاف مظاہرے، دھرنا یا مارچ سمیت اہم معاملات زیر غور آئیں گے۔
ذرائع کے مطابق اجلاس میں ملک کا معاشی بحران، آئی ایم ایف کا قرضہ اور آسمان سے باتیں کرتی مہنگائی سمیت دیگر امور زیر غور آئیں گے۔
زرداری ہاؤس میں اپوزیشن جماعتوں کے اجلاس میں مسلم لیگ نون کے رہنما اور سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، مریم نواز، پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز، پرویز رشید، امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق، سربراہ جمعیت علمائے اسلام مولانا فضل الرحمان، عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما اسفند یار ولی شرکت کریں گے۔
افظار ڈنر میں محمود خان اچکزئی، اختر مینگل، آفتاب شیرپاؤ اور اویس نورانی بھی شرکت کریں گے۔ مسلم لیگ نون کے رہنما حمزہ شہباز اور مریم نواز پہلی مرتبہ زرداری ہاؤس اسلام آباد کے مہمان بنیں گے۔
اپوزیشن اجلاس میں سربراہ جے یو آئی ف مولانا فضل الرحمان شرکا کو اپنی جماعت کی حکومت مخالف تحریک سے آگاہ کریں گے۔

دوسری جانب معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ ماہ رمضان میں افطار کے نام پر جمہوری حکومت کے خلاف سازش افسوسناک ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ رمضان کا ماہ مقدس حقوق اللہ اور حقوق العباد کا حسین امتزاج ہوتا ہے، بد قسمتی سے اس بابرکت مہینے میں عوام کو مسائل کا روزہ رکھوانے والے افطاریوں کی آڑ میں ذاتی، سیاسی اور کاروباری مفادات کے تحفظ میں مصروف عمل ہیں۔
ادھر سابق صدر آصف زرداری نے مولانا فضل الرحمان سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ ملکی سیاسی اور معاشی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا، آج ہونے والی افطار کی دعوت کی جس میں مولانا نے شرکت کیلئے ہامی بھر لی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے