مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ

اشتعال انگیز تقاریر کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی ہوگ

ویب ڈیسک : 20مئی 2019
اسلام آباد: حکومت نے مذہبی منافرت پر مبنی لٹریچر کی اشاعت و تقسیم کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کیا ہے۔یہ فیصلہ آج وفاقی وزیر داخلہ بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ کی وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار سے ملاقات میں کیا گیا۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی وزیر داخلہ اور وزیر اعلی پنجاب کے درمیان ملاقات میں صوبے میں امن و امان اورسیکیورٹی کی صورتحال کو مزید بہتر بنانے کے حوالے سے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ملاقات میں امن و امان اور سیکیورٹی کی صورتحال کی مزید بہتری کیلئے ہرممکن اقدام اٹھانے پر اتفاق کیا گیا۔
ملاقات میں فیصلہ کیا گیا کہ اشتعال انگیز تقاریر کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائی ہوگی۔ امن عامہ کی بہتری کیلئے پنجاب اور وفاق کے درمیان مربوط کوآرڈینیشن پر اتفاق کیا گیا۔ اس موقع پر طے کیا گیا کہ صوبے میں قانون کی عملداری کو ہر قیمت پر یقینی بنایا جائے گا۔
وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور وزیر داخلہ نے اس بات پر بھی باہمی اتفاق کیا کہ عوام کے جان و مال کے تحفظ سے بڑھ کر کوئی ترجیح نہیں ہے۔
وزیر اعلی نے وفاقی وزیر داخلہ کو یقین دہانی کرائی کی کہ پنجاب میں امن و امان کی صورتحال کومزید بہتر بنانے کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھایا جائے گا۔وزیر اعلی عثمان بزدار نے کہا کہ صوبے میں قبضہ مافیاء کے خلاف بلاامتیاز آپریشن جاری رہے گا۔
برگیڈئیر ریٹائرڈ اعجاز شاہ نے کہا کہ وفاقی وزارت داخلہ امن و امان کی صورتحال کے حوالے سے پنجاب حکومت کو سپورٹ کرے گی۔ میں پنجاب کے بعد دیگر صوبوں کے بھی دورے کروں گا۔
صوبائی وزیر قانون محمد بشارت راجہ،چیف سیکرٹری، انسپکٹر جنرل پولیس، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ اور پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ بھی اس موقع پر موجود تھے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے