بجلی 55 پیسے فی یونٹ مہنگی،عید پر پٹرول بم گرانے کی تیاریاں

یکم جون سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 12 روپے فی لٹر اضافے کا امکان

ویب ڈیسک : منگل 28مئی 2019
اسلام آباد:نیپرا نے بجلی پچپن پیسے فی یونٹ مہنگی کردی ، جس سے صارفین پر پانچ ارب بیس کروڑ روپے کا بوجھ پڑے گا ،اضافہ اپریل کی ماہانہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مدمیں کیاگیا ہے۔جبکہ یکم جون سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 12 روپے فی لٹر اضافے کا امکان ہے۔
تفصیلات کے مطابق نیپرا میں اپریل کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کیلئے سنٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی کی درخواست کی سماعت وائس چیئرمین نیپرا رحمت اللہ بلوچ کی سربراہی میں ہوئی۔
نیپرا کے ممبر پنجاب سیف اللہ چٹھہ اور ممبر سندھ رفیق احمد شیخ بھی شریک ہوئے، سنٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی کی اپریل کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت فی یونٹ بجلی 57 پیسے مہنگی کرنے درخواست دی تھی۔
نیپرا کو بتایاگیاکہ اپریل میں کل 9ارب 71کروڑ یونٹ بجلی پیدا کی گئی، بجلی پیداوار پر کل لاگت 53ارب تریسٹھ کروڑ روپے رہی، اپریل میں پانی سے 23فیصد کوئلے سے 10.34فیصد بجلی بنائی گئی ۔نیپرا کو بریفنگ دی گئی کہ فرنس آئل سے 4.95 فیصد گیس سے 18.42فیصد اور درآمدی ایل این جی سے 30 فیصد بجلی بنائی گئی ۔نیپرا حکام کے مطابق اپریل میں آر ایل این جی والے پلانٹس نہیں چلائے گئے جبکہ سی پی پی اے کے مطابق اپریل میں ہائیڈل سے 22.94 فیصد اورکوئلے سے 10.34 فیصد بجلی پیدا کی گئی ، مقامی گیس سے 18.24 فیصد اور درآمدی ایل این جی سے30.83 فیصد بجلی پیدا کی گئی ہے اور اپریل میں ایٹمی وسائل سے 7.67 فیصد بجلی پیدا کی گئی۔بعد ازاں نیپرا نے بجلی کے نرخوں میں 55 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی، فیصلے کا اطلاق کے الیکٹرک کے صارفین پر نہیں ہوگا۔

ادھرعید پر حکومت کی جانب سے عوام کو مہنگائی کا ایک اور تحفہ ملنے والا ہے اور یکم جون سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 12 روپے فی لیٹر اضافے کا امکان ہے۔ذرائع پیٹرولیم ڈویژن کا کہنا ہے کہ یکم جون سے پیٹرول کی قیمت میں ساڑھے 9 روپے فی لیٹر، ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 11 روپے 50 پیسے، لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں 7 روپے 85 پیسے اور مٹی کا تیل بھی 12 روپے فی لیٹر مہنگا ہونے کا امکان ہے۔
ذرائع کے مطابق قیمتوں میں اضافے کی سمری 30 مئی کو وزارت خزانہ کو ارسال کی جائے گی جب کہ نئی قیمتوں کا اطلاق وزیر اعظم کی مشاورت سے ہوگا۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے