وفاقی کابینہ کا اجلاس، بجٹ پر اراکین کو بریفنگ

ویب ڈیسک : منگل 28مئی 2019
اسلام آباد:وفاقی کابینہ کے اجلاس میں مشیر خزانہ نے بجٹ کے حوالے سے ارکان کو بریفنگ دی جبکہ کابینہ اراکین نے مشیر خزانہ کو اپنی تجاویز بھی دیں۔وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت ہوا۔ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں مشیر خزانہ حفیظ شیخ بجٹ حکمت عملی 20-2019 کے دستاویزات پر اراکین کو بریفنگ دی اور بجٹ کے نمایاں خدوخال کے بارے میں کابینہ کو آگاہ کیا۔اجلاس میں تمام وزارتیں اور ادارے اپنے اثاثوں کے بارے میں کابینہ کو معلومات فراہم کرنا تھی جبکہ کچی کینال کی تعمیر میں کرپشن کے حوالے سے مشترکہ مفادات کونسل کے فیصلے پر غور کیا جانا تھا۔
کابینہ اجلاس میں ملک میں امن و امان اور موجودہ معاشی صورتحال پر بھی غور کیا گیا۔اجلاس میں مزید نکات کا اضافہ کرتے ہوئے پاکستان کونسل آف ریسرچ ان واٹر ریسورسز کو وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سے وزارت آبی وسائل کے حوالے کرنے پر غور کیا گیا۔بجٹ اجلاس کے دوران ارکان پارلیمنٹ اورصحافیوں کو کھانا اور ہائی ٹی دینے کی منظوری بھی زیر غور رہی جبکہ کابینہ شیخ زید میڈیکل انسٹیٹیوٹ لاہور کو پنجاب سے واپس لے کر وفاقی حکومت کے حوالے کرنے کی منظوری پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔گزشتہ کابینہ اجلاس میں ’’کامیاب جوان پروگرام‘‘ کی اصولی منظوری دی گئی تھی جبکہ وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے امور نوجوانان عثمان ڈار نے کابینہ کو ’’کامیاب جوان پروگرام‘‘ پر بریفنگ دی تھی۔
عثمان ڈار نے ’’کامیاب جوان پروگرام‘‘ کو ملک بھر کے نوجوانوں کے لیے اچھی اور بڑی خبر قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ وزیراعظم کے بعد کابینہ نے بھی پروگرام کی توثیق کر دی اور مشکل معاشی حالات کے باوجود اس پروگرام کے لیے 100 ارب روپے مختص کیے گئے۔ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ 8 ماہ کی انتھک محنت کے بعد جامع پروگرام تشکیل دیا گیا جس سے 10 لاکھ نوجوان براہ راست مستفید ہو سکیں گے اور وزیر اعظم کا نوجوانوں کو با اختیار بنانے کا مشن آگے بڑھے گا۔
گزشتہ اجلاس میں کابینہ نے اسلام آباد لوکل گورنمنٹ بورڈ کی تشکیل نو اور بینکنگ کورٹ کراچی کے جج کی تعیناتی کی بھی منظوری دی جبکہ وزیر اعظم عمران خان نے تمام وزرا کو ایک بار پھر کفایت شعاری مہم پر عمل کرنے کی ہدایت کی تھی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے