ورلڈکپ کا افتتاحی میچ،انگلینڈ کی بیٹنگ جاری

ویب ڈیسک : 30مئی 2019

لندن: آئی سی سی ورلڈ کپ 2019 کے افتتاحی میچ میں جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر میزبان انگلینڈ کے خلاف فیلڈنگ کا فیصلہ کیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق آئی سی سی ورلڈ کپ کا افتتاحی میچ اوول گراؤنڈ میں انگلینڈ اور جنوبی افریقہ کے درمیان کھیلا جارہا ہے۔
جنوبی افریقی کپتان کا پہلا اوور اپنے اسٹار لیگ اسپنر عمران طاہر کو دینے کا فیصلہ جادوئی ثابت ہوا۔


انگلیند کے ان فارم اوپنرز پہلے ہی اوور میں لیگ اسپنر کو کھیلنے کے لیے تیار نہ تھے۔ دوسری ہی گیند پر جونی بیئرسٹو پویلین لوٹ گئے۔تاہم اس کے بعد کپتان جو روٹ اور جیسن روئے نے انگلینڈ کی کمان سنبھال لی۔
دونوں کے درمیان شراکت ابھی جاری ہے تاہم انگلش کھلاڑی اس تیزی سے رنز نہیں بنا پارہے جس طرح کا انداز حال ہی میں پاکستان کے خلاف سیریز میں دیکھا گیا تھا۔یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ ابتدائی دس اوورز جنوبی افریقہ کے نام رہے ہیں تاہم انگلینڈ جو روٹ اور جیسن روئے کے درمیان شراکت جنوبی افریقہ کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتی ہے۔
دس اوورز کے اختتام پر انگلینڈ نے 60 رنز بنالیے تھے جبکہ اس کی ایک وکٹ گرچکی تھی۔
دونوں ٹیمیں ماضی میں ورلڈ کپ کے میچز میں چھ مرتبہ مدمقابل ہوچکی ہیں جن میں تین میچز جنوبی افریقہ جبکہ تین انگلینڈ کے نام رہے۔
ون ڈے میچز میں انگلینڈ اور جنوبی افریقہ کے درمیان 59 میچز کھیلے گئے ہیں جن میں 29 میں جنوبی افریقہ فاتح رہا جبکہ انگلینڈ کو 26 میچز میں کامیابی ملی۔ ایک میچ برابر جبکہ تین بے نتیجہ رہے۔
انگلینڈ کے پاس مڈل آرڈر بیٹسمین آئن مورگن، جوس بٹلر اور جو روٹ جیسے جارحانہ بلے باز جبکہ کرس ووکس اور عادل رشید جیسے بولرز کی خدمات حاصل ہیں۔
جنوبی افریقہ کی ٹیم میں کوائنٹن ڈی کوک، فاف ڈوپلیسی جیسے جارحانہ بلے باز جبکہ کاگیسو رباڈا اور عمران طاہر جیسے بولرز کھیل رہے ہیں
انگلینڈ کے خلاف میچ میں جنوبی افریقہ کو فاسٹ باؤلر ڈیل اسٹین کی خدمات حاصل نہیں ہیں، وہ زخمی ہونے کے باعث میچ سے باہر ہوگئے ہیں۔ میزبان ٹیم کے کپتان آئن مورگن کے مطابق ہوم گراؤنڈ میں ورلڈ کپ جیت کر کرکٹ میں حیران کن کارنامہ انجام دے سکتے ہیں۔
دوسری جانب جنوبی افریقہ کے کپتان فاف ڈیوپلیسی کا کہنا ہے کہ ہم اس ٹورنامنٹ میں فیورٹ کے طور پر یا کم فیورٹ کے طور پرشامل ہوں لیکن ہمیں گراؤنڈ میں جا کر کرکٹ کھیلنی ہے اور ورلڈ کپ جیتنے کے لیے کارکردگی دکھانی ہے۔
اس جیتنے کے بعد ان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس اچھے باؤلرز ہیں، ہاشم آملہ کا رنز کرنا خوش آئند ہے۔
خیال رہے کہ آئی سی سی ورلڈ کپ کے لیے 10 ٹیمیں ایونٹ میں حصہ لے رہی ہیں۔ ٹیموں کو 2 گروپس میں تقسیم کیے جانے کے بجائے تمام ٹیمیں ایک دوسرے کے خلاف میچ کھیلیں گی۔
ایونٹ میں دفاعی چیمپیئن آسٹریلیا، بھارت، پاکستان، انگلینڈ، نیوزی لینڈ، جنوبی افریقہ، ویسٹ انڈیز، بنگلہ دیش، سری لنکا اور افغانستان شامل ہیں۔
آئی سی سی ورلڈ کپ کے ایونٹ میں 48 میچز کھیلے جائیں گے، فائنل اور سیمی فائنل سے قبل تمام ٹیمیں 9، 9 میچز کھیلیں گی جن میں سے 4 ٹیمیں سیمی فائنل میں جگہ بنائیں گی۔ فائنل 14 جولائی کو کھیلا جائے گا۔
پاکستان کرکٹ ٹیم اپنا میچ 31 مئی کو ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلے گی جو پاکستانی وقت کے مطابق دوپہر ڈھائی بجے شروع ہوگا۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے