منی لانڈرنگ ختم نہ ہوئی توبلیک لسٹ میں چلے جائیں گے: فردوس عاشق اعوان

ویب ڈیسک : 31مئی 2019
اسلام آباد: معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ منی لانڈرنگ ختم نہ کی گئی، تو گرے سے بلیک لسٹ میں چلے جائیں گے-ان خیالات کا اظہار انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کیا.
ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی اسکیم، ایمنسٹی نہیں اثاثے ظاہرکرنےکی اسکیم ہے، ماضی میں حکومت کو فائدہ دینے کی بجائے لوگوں نے کاغذوں میں سب وائٹ کر الیا، بحیثیت قوم وملک منی لانڈرنگ کا لیبل ہٹانا ہوگا، منی لانڈرنگ ختم نہ کی گئی تو گرے سے بلیک لسٹ میں چلے جائیں گے.جعلی اکاؤنٹس میں پڑے پیسےاصلی اکاؤنٹس میں لےآئیں، تو مہنگائی ختم ہوجائے گی
فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ن لیگ اپنی حکومت کے خاتمے سے ڈیڑھ ماہ پہلےایمنسٹی اسکیم لائی، 26 ممالک میں ڈیڑھ لاکھ کےقریب اکاؤنٹس ہیں، اگربے نامی اثاثے ظاہرنہیں کئے گئے، تو قانون حرکت میں آئے گا.ان کا کہنا تھا کہ فالودےاورریڑھی والےکےاکاؤنٹس سےاربوں نکل رہے ہیں، قوم کے جعلی اکاؤنٹس میں پڑے پیسےاصلی اکاؤنٹس میں لےآئیں، تو مہنگائی ختم ہوجائے گی.
ان کے مطابق عمران خان ملک میں دو نہیں، ایک پاکستان لا رہے ہیں، اپوزیشن خود کو زندہ رکھنے کے لئے کچھ نہ کچھ کرتی رہتی ہے، حکومت پر دباؤ، عوام کوڈھال بنانااپوزیشن کاکام ہے، گزشتہ حکومت کےغلط فیصلوں سےعوام کو مشکلات آئیں، مصنوعی طورپرڈالرکو مستحکم رکھنے سے پریشانی اٹھانا پڑتی ہے.
فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ اسٹیٹس کو کے بینفشری کا ٹولہ ایک طرف ہوگیا ہے، ان بینفشریز نے ملک کے سسٹم کو 70 سال جکڑے رکھا، موجودہ حکومت انسٹیٹیوشنل ریفارمز کی طرف جارہی ہے، تمام اتحادیوں کوحکومت نے ساتھ لےکرچلناہے، بلوچستان میں اتحادی حکومت کی طاقت ہیں-

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے