الحمرا میں نامور ادیب،اداکار اور مصورڈاکٹر انور سجاد کی یاد میں خصوصی تقریب

ڈاکٹر انور سجاد نے اردوزبان و ادب کو جدت سے ہمکنار کیا:مقررین

صبح صادق
قافلہ نیوزڈاٹ کام،لاہور
جمعرات 13جون 2019


لاہور آرٹس کونسل الحمرا ء میں نامور افسانہ نویس،ڈرامہ نگار،اداکار اور مصور ڈاکٹر انور سجاد کی یاد میں تقریب منعقد کی گئی جس میں میاں اعجاز الحسن،منیزہ ہاشمی، توقیر ناصر، اصغر ندیم سید، خالد عباس ڈار اور پریا سجادنے ڈاکٹر انور سجاد کے فن اور شخصیت پر اظہار خیال کیا۔
چیئرمین الحمرا توقیر ناصر نے تقریب میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر انور سجاد جیسے دانشور صدیوں بعد پیدا ہوتے ہیں،انھوں نے کہا کہ ہمیں اپنے فنکاروں کو وہ مقام دینا ہوگا جس کے وہ مستحق ہیں۔خالد عباس ڈار نے ڈاکٹر انور سجاد کے ساتھ بیتے دن کی یادیں تازہ کیں اور کہا کہ ڈاکٹر انور سجاد نے سچی لگن اور جذبے سے کام کیا۔ منیزہ ہاشمی نے ڈاکٹر انور سجاد کو زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر انور سجاد ایک عمدہ لکھاری،متاثر کن ادیب اور رجحان ساز ڈرامہ نگار تھے، انہوں نے کئی شعبوں میں اپنی مہارت کا لوہا منوایا،نقاد بھی ان کے کام کے بے حد معترف تھے،انہوں نے افسانہ نگاری میں نئی تکنیک دریافت کیں۔ایگزیکٹو ڈائریکٹر لاہور آرٹس کونسل اطہر علی خان نے ڈاکٹر انور سجاد کو خوبصورت انداز میں یاد کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر انور سجاد ہماری زبان و ادب میں ایک درخشاں باب ہیں،انکی شخصیت کے کئی پہلو ہیں،انہوں نے فنون لطیفہ کی جس صنف میں خود کو آزمایا پوری محنت اور جستجو سے کامیاب ہوئے۔

میاں اعجاز الحسن نے تقریب سے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر انور سجاد کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا، وہ بے حد منفر د پینٹر تھے۔نامور ادیب اصغر ندیم سید نے اپنے تاثرات میں کہا کہ ڈاکٹر انور سجاد نے ادب کی جس جس صنف میں کام کیا اسی کوجدیت سے ہم کنار کیا، ان کی فکر معاشرتی ترقی کے خواں تھی،انھوں نے اپنے قلم کے ذریعے مسلمہ اقدار کی ترجمانی کی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے