زرداری کی طبعیت بگڑ گئی،طبی معائنہ کے بعد نیب آفس منتقل

ویب ڈیسک | جمعرات 13جون 2019
اسلام آباد: سابق صدر آصف علی زرداری کو راولپنڈی کے انسٹی ٹیویٹ آف کارڈیالوجی میں طبی معائنے کے بعد نیب اسلام آباد آفس منتقل کردیا گیا۔تفصیل کے مطابق منی لانڈرنگ کیس میں نیب کے زیر تفتیش سابق صدر اور پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کو طبیعت خراب ہونے پر راولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی لایا گیا تھا۔اس سے قبل صف زرداری کے طبی معائنے کے لئے ڈاکٹروں پر مشتمل ٹیم نیب کے دفتر گئی تھی اور سابق صدر کا مکمل چیک اپ کیا، اس دوران آصف زرداری کے دل کی دھڑکن، شوگر لیول اور بلڈ پریشر بھی چیک کیا گیا جس میں سے شوگر لیول کم اور دل کی ڈھرکن اور بلڈ پریشر نارمل تھا، تاہم بعد میں انہیں بلڈ پریشر ہائی ہونے پر اسپتال منتقل کیا گیا۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ پولی کلینک کی تین رکنی خصوصی میڈیکل ٹیم آصف زرداری کے ہمراہ تھی، اور آر آئی سی اسپتال کی ایمرجنسی میں سابق صدر کا طبی معائنہ میجرجنرل (ر) اظہرمحمود کیانی کی نگرانی میں کیا گیا۔
زرداری کی آر آئی سی اسپتال پہنچنے پر سکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی تھی جب کہ سکیورٹی اہلکاروں نے غیر متعلقہ افراد کو اسپتال سے باہر نکال دیا تھا۔
دوسری جانب پاکستان پیپلزپارٹی کے اعلامیے کہ مطابق نیب کے میڈیکل بورڈ نے سابق صدر آصف علی زرداری کے لیے کچھ ٹیسٹ تجویز کئے تھے، نیب کی ٹیم میڈیکل بورڈ کی جانب سے مجوزہ ٹیسٹ کروانے کے لئے سابق صدر آصف علی زرداری کو راولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی لے کر گئی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے