وزیراعظم کی گھوٹکی آمد

ویب ڈیسک | 19جون 2019
گھوٹکی :وزیراعظم عمران خان اسلام آباد سے گھوٹکی پہنچ گئے ہیں جہاں انہوں نے سابق وفاقی وزیر سردار علی محمد خان مہر کی وفات پرانکے اہل خاندان سے تعزیت کی ۔گورنرسندھ عمران اسماعیل، جہانگیر ترین، غوث بخش مہر اور وفاقی وزیرمحمدمیاں سومرو بھی ان کے ہمراہ ہیں۔وزیراعظم سردار علی گوہراور علی نواز مہر کےگھر پہنچے اور ملاقات میں سردار علی محمد مہر کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا، گوہر پیلس میں علی گوہر مہر کی جانب سے عمران خان کو ظہرانہ دیا جائے گا۔
ذرائع کا کہنا ہے وزیر اعظم پی ٹی آئی اور جی ڈی اے رہنماؤں سے ملاقات بھی کریں گے ، جس میں این اے 205 کی نشست پر ہونے والے الیکشن پر بھی تبادلہ خیال کیا جائے گا۔
وزیر اعظم کی آمد سے قبل گوہر پیلس میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گیے ہیں۔
وزیراعظم گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس (جی ڈی اے)کے رہنما سردار علی گوہر مہر کی جانب سے دیئے گئے ظہرانے میں بھی شریک ہونگے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ سردار علی محمد خان مہر کے بیٹے احمد علی مہر کی آج تحریکِ انصاف میں شمولیت کا امکان ہے۔
ذرائع نے بتایا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کا گھوٹکی سے واپسی پر لاہور آئیں گے جہاں وہ اپنی فیملی میں نجی ملاقات کریں گے۔
وزیر اعظم عمران خان لاہورمیں اپنے ماموں ہمایوں زمان خان کی وفات پر انکی رہائش گاہ پر جاکر اپنے ماموں کے اہل خانہ سےتعزیت کرینگے۔
وزیر بلدیات سندھ سعید غنی نے کہاہے کہ گھوٹکی میں وزیر اعظم کی آمد غیرقانونی ہے،الیکشن کمیشن کے کوڈ آف کنڈکٹ کے تحت سرکاری عہدوں پر فائز لوگ ایسے علاقوں کا دورہ نہیں کرسکتے جہاں انتخابی شیڈول کا اعلان کردیا گیاہو۔
سندھ اسمبلی کے باہر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نہ صرف گھوٹکی کا دورہ کررہے ہیں بلکہ علاقے کے لوگوں کو بلایا گیاہے۔ یہ عمل وزیر اعظم کی طرف سے قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ اس عمل سے شفاف انتخاب کی توقع نہیں ہے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے