آئی ایس پی آر نےیوم دفاع 6 ستمبر سے متعلق پرومو جاری کر دیا

ویب ڈیسک : 03 ستمبر 2019
راولپنڈی: ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے یوم دفاع و شہداء سے متعلق سوشل میڈیا پر پرومو جاری کر دیا ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرسے جاری پیغام میں انہوں نے لکھا ہے کہ یوم دفاع و شہدا 6 ستمبر 2019،پچھلے سال کی طرح آئیں اور ہرشہید کے گھرچلیں۔


انہوں نے 6 ستمبر سے متعلق آئیں چلیں شہید کے گھر اور کشمیر بنے گا پاکستان کا ٹوئٹر ہیش ٹیگ بھی متعارف کرایا ہے۔
واضح رہے کچھ روز قبل آئی اسی پی آر کے دفتر میں یوم دفاع و شہدا 2019 کے حوالے سے کانفرنس منعقد کی گئی جس میں اس دن کو شایان شان طریقے سے منانے اور تقریبات منعقد کرنے کے حوالے سے بات چیت ہوئی تھی۔آئی ایس پی آر میں منعقد ہونے والی اس کانفرنس میں ملک بھر سے سول و فوجی حکام نے شرکت کی۔
ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کا اس بابت کہنا تھا کہ گزشتہ برس شروع کیا گیا ہر شہید کے گھر جانے کا پروگرام اس سال بھی جاری رکھا جائے گا۔ پچھلے سال ہر شہید کو یاد رکھنے والے اس پروگرام کو بہت پذیرائی ملی اور اسی کے باعث ہر شہید کو یاد کیا گیا۔عوام سے درخواست ہے کہ اس مرتبہ بھی ہر شہید کے گھر پہنچیں اور ان کے لواحقین سے مل کر ان کا شکریہ ادا کریں۔میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ اس دن کی مناسبت سے گلی گلی محلے محلے شہیدوں کی تصاویر آویزاں کی جائیں گی جبکہ اس حوالے سے مرکزی تقریب جنرل ہیڈ کوارٹرز (جی ایچ کیو) میں منعقد ہو گی۔ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ عظیم قومیں اپنے شہیدوں کو یاد رکھتی ہیں۔
یومِ دفاع و شہدا کی تقریب کے فارمیٹ میں تبدیلی کر دی گئی ہے۔ اس مرتبہ یوم دفاع کی تقریب شام کے بجائے دن میں منعقد کی جائے گی جس میں صرف شہدا کے لواحقین اور غازی شرکت کریں گے۔آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ جی ایچ کیو میں یاد گارِ شہدا پر حاضری دیں گے اور پھول چڑھائیں گے جس کے بعد وہ شہدا کے لواحقین اور غازیوں سے ملاقات کریں گے۔میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ اسی طرح فارمیشن اور شہر شہر تقریبات ہوں گی، ساتھ ہی یومِ دفاع کی مناسبت سے چھاؤنیوں میں ہتھیاروں کی نمائش ہوگی۔ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ ”کشمیر بنے گا پاکستان“ تقریبات کا حصہ ہو گا۔ پچھلے سال کی طرح اس سال بھی عوامی مقامات پر شہیدوں کی تصاویر لگائی جائیں گی، بسوں، ٹرکوں، ریلوے اسٹیشنوں، ہوائی اڈوں اور مارکیٹس میں شہیدوں کی تصاویر لگائی جائیں گی۔شہیدوں کے گلی، محلے، گاؤں اور شہر میں بھی اُن کی تصاویر لگائی جائیں گی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے