پولیس کے تشدد سے ایک اور نوجوان جاں بحق، آئی جی پنجاب کا نوٹس

ویب ڈیسک : 03 ستمبر 2019
لاہور: پولیس گردی کا ایک اور واقعہ منظر عام پر آگیا، شمالی چھاؤنی انویسٹی گیشن پولیس کےبہیمانہ تشدد سے نوجوان جاں بحق ہوگیا، آئی جی پنجاب نے واقعے کا نوٹس لیکر رپورٹ طلب کر لیں۔
تفصیلات کے مطابق شمالی چھائونی انویسٹی گیشن پولیس کے تشدد کا نشانہ بننے والا نوجوان عامر سروسز ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئےدم توڑ گیا، لواحقین نے سروس ہسپتال کے باہر روڈ بلاک کر کے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔
لواحقین کا کہنا تھا کہ مقتول عامر مالی کا کام کرتا تھا، جسے شمالی چھاؤنی پولیس نے چار روز قبل حراست میں لیا اور ٹارچر سیل میں تشدد کرتے رہے اور عامر کی حالت غیر ہونے پر اسے پرائیویٹ گاڑی میں ہسپتال کے باہر چھوڑ کر فرار ہو گئے۔آئی جی پنجاب نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور سے پولیس تشدد کی رپورٹ طلب کرلی، ہلاک ہونے والے نوجوان کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا گیا، پولیس نے ایس ایچ او خرم گل کو حراست میں لے لیا۔
واضح رہے کہ دو دن قبل رحیم یارخان میں پولیس تشدد سے اے ٹی ایم کارڈ چوری کا ملزم صلاح الدین دم توڑ گیا تھا جس کی ہلاکت کا مقدمہ پولیس تھانیدار اور اہلکاروں کے خلاف درج کرلیا گیا تاہم ابھی تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی جاسکی ہے-ادھر وزیراعظم عمران خان نے پیر کے روز لاہور میں اعلیٰ سطحی اجلاس میں پولیس کے روایتی طریقہ تفتیش کو غیر انسانی کا قابل مذمت قرار دیتے ہوئے اس میں تبدیلی لانے کے احکامات جاری کیے تھے-

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے