الحمراء میں ثریاملتانیکر کے ساتھ خصوصی نشست

کلچرل ڈیسک| 20ستمبر2019
لاہور:بنیادی فن سیکھے بغیر گائیکی کے شعبے میں خدمت نہیں کی جا سکتی،ریاضیت،اساتذہ اور کام سے لگن کامیابی کی ضامن ہیے۔بچپن میں ہر محفل میں کلاسیکل گایا،زندگی میں بڑی محنت کی،سچ کا ساتھ کبھی نہیں چھوڑا،اچھا،برا وقت آتا ہے اور گزر جاتا ہے،حوصلہ سے آگے بڑھنا چاہیے۔ان خیالات کا اظہار نامور گلوکارہ ثریا ملتانیکر نے لاہور آرٹس کونسل الحمرا کے نئے شروع کئے جانے والے ادبی و ثقافتی سلسلے ”کچھ یادیں، کچھ باتیں“میں حاضرین کو اپنے فنی سفر، تجربات و مشاہدات سے آگاہ کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے چیئرپرسن الحمرا منیزہ ہاشمی کے اس اقدام کو بھرپور سراہتے ہوئے کہا کہ آپ کا کام جب سراہا جائے تو حوصلہ ملتا ہے،آگے بڑھنا ہے تو استاد کو عزت و احترام دو،ثریا ملتانیکر کا کہنا ہے کہ ملتان میوزک کا گڑھ تھا،گھر کاماحول اچھا تھا،سنہری اقدار کو یاد کرکے دل کو سکون ملتا ہے۔۔چیئرپرسن بورڈ آف گورنز لاہور آرٹس کونسل الحمرا منیزہ ہاشمی نے تقریب میں خصوصی شرکت کی۔چیئرپرسن بورڈ آف گورنز الحمرا منیزہ ہاشمی کی طرف سے اٹھائے گئے اس نئے سلسلے ”کچھ یادیں، کچھ باتیں“ کی یہ پہلی نشست تھی۔اس سلسلے کے تحت آرٹ، تھیٹر، مصوری، ادب، موسیقی،اداکاری اور فنون لطیفہ کے تمام شعبوں میں اعلی خدمات سر انجام دینے والی شخصیات کو مدعو کیا جائے گا جس کا مقصد ان شخصیات کے تجربات سے نوجوانوں کواستفادہ کرنے کا موقع فراہم کرنا اور ان کو خراج تحسین پیش کرنا ہے۔پروگرام میں نامور گلوکارہ راحت ملتانیکر نے پرفارم بھی کیااورحاضرین کے دل موہ لیے،سامعین انہیں داد دیئے بغیرنہ رہ سکے۔ایگزیکٹو ڈائریکٹر لاہور آرٹس کونسل الحمراء اطہر علی خان نے اس پروگرام کے حوالے سے اپنے تاثرات میں کہا کہ ثریا ملتانیکر کی گلوکاری سے اپنی دھرتی اور وسیب کی خوشبو آتی ہے،نامور گلوکارہ کی آواز ہماری سماعتوں میں رس گھولتی ہے، وہ دنیا میں پاکستان کا حوالہ اور پہچان ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ثریا ملتانیکر کی شہرت کی سرحدیں وہاں تک پھیلی ہوئی ہیں جہاں تک انکی آواز جاتی ہے،انکا فن نئی نسل کے قابل تقلید ہے،انھوں نے کہا کہ یہ مقام حاصل کرنے کے لئے ثریا ملتانیکر نے طویل جدو جہد کی۔انہوں نے راحت ملتانیکر کے فن کے حوالے سے اپنے تاثرات میں کہا کہ راحت ملتانیکر اپنی والدہ کی فنی میراث کی محافظ ہیں،وہ نئی نسل کی نمائندہ آواز ہیں،ان کی شہرت کا بھی لازوال سلسلہ جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ الحمرا کا یہ نیا سلسلہ ”کچھ یادیں،کچھ باتیں“ ادب وثقافت کے شعبے کی ان شخصیات کو خراج تحسین پیش کرنے کا ذریعہ ہے جنہوں نے اپنی زندگیاں ادب وثقافت کی ترویج و ترقی پر صرف کر دیں۔ ”کچھ یادیں، کچھ باتیں“ کی ماڈریٹر سمیرا خلیل نے نشست کو احسن انداز میں آگے بڑھایا۔سامعین کی طرف سے الحمرا کے نئے سلسلے ”کچھ یادیں، کچھ باتیں“ کی بھرپور پذیرائی ملی انھوں نے انتظامیہ کی اس کاوش کو سراہا گیا۔واضح رہے الحمرا کے اس اد بی و ثقافتی سلسلہ ”کچھ یادیں،کچھ باتیں“ کا انعقاد ہر ماہ کے تیسرے جمعہ کوسہ 5بجے الحمرا ہال نمبر تین میں ہواکرے گا۔جس میں ادب و ثقافت کے شعبے میں اعلی خدمات سرانجام دینے والے افراد کو مدعو کیا جائے گا۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے