برطانوی شاہی جوڑا چترال پہنچ گیا،خوبصورت نظاروں کا فضائی جائزہ

ویب ڈیسک : 16اکتوبر2019
اسلام آباد: برطانوی شاہی جوڑا شہزادہ ولیم اور ان کی اہلیہ کیٹ مڈلٹن چترال پہنچ گئے ہیں جہاں پر ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا اور انہیں روایتی ٹوپی پہنائی گئی۔
ذرائع کے مطابق برطانوی شاہی جوڑے نے کوہ ہندوکش کے برف پوش پہاڑوں اور وہاں کے خوبصورت نظاروں کا فضائی جائزہ لیا ہے۔اس کے علاوہ شہزادہ ولیم اور شہزادی کیٹ میڈلٹن نے موسمیاتی تبدیلیوں سے پگھلتے ہوئے گلیشیئرز کو بھی دیکھا اور تشویش کا اظہار کیا ہے۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ شاہی جوڑا چترال میں سیلاب سے ہونے والے نقصانات اور سرچ اینڈ ریسکیو ٹیموں کی استعداد کار کا جائزہ لے گا۔بعد ازاں شہزادہ ولیم اوران کی اہلیہ شہزادی کیٹ میڈلٹن مقامی کیلاش قبیلے کے روایتی رہن سہن کو بھی دیکھیں گے۔
یاد رہے برطانوی شاہی خاندان کے کسی بھی فرد کا یہ 13 سال بعد پاکستان کا پہلا دورہ ہے۔
گزشتہ روز شہزادہ ولیم اورکیٹ مڈلٹن نے صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان سے خوشگوار ماحول میں ملاقات کی تھی۔شاہی مہمانوں کی وزیراعظم ہاوس آمد پر عمران خان نے ان کا استقبال کیا۔صدر مملکت عارف علوی سے معزز مہمانوں کی ملاقات میں خاتون اول ثمینہ علوی بھی موجود تھیں۔
عمران خان کے ساتھ ملاقات میں ماحولیات اور تعلیمی کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات پر بات چیت کی گئی۔
مہمانوں کو پاکستان میں عوامی فلاح کے منصوبوں، غربت کے خاتمے اور ماحولیات کی بہتری کے لیے اٹھائے گئے اقدامات سے آگاہ کیا گیا۔وزیراعظم عمران خان نے برطانوی شاہی جوڑے کے اعزاز میں ظہرانہ دیا۔ ظہرانے میں معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان، زلفی بخاری اور ثانیہ نشتر سمیت کابینہ کے پانچ ارکان نے شرکت کی۔

ادھربرطانوی شاہی جوڑا اسلام آباد میں اپنے اعزازمیں رکھی گئی تقریب میں شرکت کے لیے پہنچا تو شہزادی کیٹ مڈلٹن عروسی لباس زیب تن کیے ہوئی تھیں جب کہ شہزادہ ولیم نے سبز رنگ کی شیروانی زیب تن کر رکھی تھی۔
خوبصورت ڈیزائن والی سبز رنگ کی دلکش شیروانی جس کی آستینیں اور دامن ایمبرائیڈری سے آراستہ تھے نے شہزادہ ولیم کی شخصیت کو مزید نکھار دیا۔یہ خوبصورت شیروانی پاکستان کے کس شہر میں بنائی گئی، کس نے بنائی اوراس کی تیاری میں کتنا عرصہ لگا ؟
تو جانیےیہ شیروانی شاہکار ہے کراچی کے معروف ڈیزائنر نعمان عارفین کا جنہوں نے اسے برطانوی شہزادے کے لیے خصوصی طور پر تیار کیا تھا۔شیروانی کے حوالے سے ڈیزائنر کا کہنا ہے کہ یہ منفرد جامہ وار سے بنائی گئی ہے اورشہزادہ ولیم کی خواہش پر ہی اُن کے لیے تیار کی گئی۔ڈیزائنر نعمان عارفین کے ملبوسات برطانیہ میں بہت مقبول ہیں اور یہ ہی وجہ ہےکہ شہزادہ ولیم نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر نعمان عارفین سے رابطہ کرکے ان سے شیروانی تیار کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔دورہ پاکستان کےدوران برطانوی شہزادے اور شہزادی کی جانب سےمشرقی لباس زیب تن کرنے پر شاہی جوڑے کو بے حد پذیرائی مل رہی ہے۔
پرنس ولیم کی شیروانی ڈیزائن کرنے والے پاکستانی فیشن ڈیزائنرنعمان عارفین نے بتایا شیروانی صرف دودن میں تیار کی گئی، پاکستان کے لئے یہ فخرکی بات ہے کہ روایتی شیروانی پہنی گئی، جس پر شہزادہ ولیم کے شکر گزار ہے۔
فیشن ڈیزائنر نعمان عارفین نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک پر اپنے پیغام میں کہا پرنس ولیم کی شیروانی صرف2روزمیں تیارکی، شہزادے نے نیلے رنگ پر سبز بٹن لگانے کی فرمائش تھی، میں نے اپنی مرضی سے دوسری شیروانی بھیجی تو پرنس نے دونوں رکھ لیں۔نعمان عارفین نے کہا پاکستان کے لئے یہ فخرکی بات ہے کہ روایتی شیروانی پہنی گئی اور شہزادہ ولیم کے شکر گزار ہے ، انھوں نے ہمارے ورثے اور روایت کو خوبصورتی سے پیش کیا۔
یاد رہے گذشتہ روز شاہی جوڑے کے اعزاز میں اسلام آباد مونیومنٹ پر عشائیہ دیا گیا ، شہزادہ ولیم اورکیٹ رکشے میں پہنچے، شاہی جوڑے نے خوبصورت روایتی لباس زیب تن کررکھا تھا۔ولیم نے شیروانی اور کیٹ نے گہرے سبز رنگ کی میکسی پہنی، شاہی جوڑے کا قومی ترانے اور روایتی موسیقی کے ساتھ استقبال کیا گیا۔کنگسٹن پیلس سےبھی ٹک ٹک میں آمد اورشاندار استقبال پر ٹوئٹ کیا گیا جبکہ آئرش ولاگر نے شاہی جوڑے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ان دونوں نے روایتی مشرقی لباس کا میلہ لوٹ لیا۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے