یوم سیاہ:ضلع رحیم یارخان میں یکجہتی کشمیرریلیاں نکالی گئیں

ویب ڈیسک : 27اکتوبر2019
رحیم یارخان: مقبوضہ کشمیر پر بھارت کے غاصبانہ قبضہ کے خلاف ضلع بھر میں یوم سیاہ منایا گیا،چاروں تحصیلوں میں مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لئے انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنائی گئی اور ریلیاں نکالی گئیں،مرکزی ریلی ڈپٹی کمشنر آفس سے نکالی گئی جس کی قیادت ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر نے کی،ریلی میں اسسٹنٹ کمشنرز چوہدری اعتزاز انجم ، ریاست علی، سی ای اوڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رنداھاوا، ڈپٹی ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ چوہدری طالب حسین رندھاوا، پرنسپل گورنمنٹ خواجہ فرید پوسٹ گریجویٹ کالج پروفیسر ڈاکٹر اجمل بھٹی سمیت ممبران امن کمیٹی ریاض احمد نوری، قاضی خلیل الرحمن،پی ٹی آئی رہنما شمیل مرزا، مون چوہان، چوہدری محمد اشرف، فوزیہ عباس، نائب صدر چیمبر آف کامرس افتخار انجم، چوہدری بوٹا طاہر، محبوب خان، چوہدری محمد بوٹا عابد، ڈاکٹر ماجد خان سمیت ضلعی محکموں کے افسران ، ملازمین، سول سوسائٹی، وکلائ، ڈاکٹرز، ریسکیو1122، سول ڈیفنس، انجمن تاجران اور شہریوں کی کثیرتعداد نے شرکت کی۔ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر نے کہا کہ بھارت اپنی بزدل افواج کی طاقت کے بل بوتے پر کشمیروں کے حقوق غصب کرنے کی ناکام کوشش کر رہا ہے، آئے روز نہتے کشمیریوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑ و انہیں شہید کیا جا رہا ہے مگر بھارت جان لے کہ جدوجہد آزادی کی تحریک کو ظلم و ستم سے دبایا نہیں جا سکتا۔انہوں نے کہا کہ یوم سیاہ منانے کا مقصد عالمی منصفوں کو انصاف کے تقاضے یاد کرانا ہے کہ وہ کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے لئے اپنا مثبت کردار ادا کریں۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کی قربانیاں ضرور رنگ لائیں گی اور تحریک آزادی کشمیر کے نامکمل ایجنڈے کی تکمیل تک ہر فورم پر پاکستان کشمیریوں کی حمایت جاری رکھے گا۔ریلی کے اختتام پر قاضی خلیل الرحمن نے دعا کرائی۔

ادھریوم سیاہ پر صادق آباد میں بھارت کے خلاف اور کشمیریوں کی حمایت میں ریلی نکالی گئی جس میں اسسٹنٹ کمشنرعامر افتخار،سابق تحصیل ناظم ڈاکٹر طالوت سلیم باجوہ،تحریک انصاف کے صوبائی رہنما چوہدری سجاد احمد وڑائچ ،تاجر تنظیموں کے عہدیداروں،سیاسی سماجی تنظمیوں،محکمہ تعلیم کے افسروں،اساتذہ،طلبہ،صحافیوں سمیت ہر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد نے شرکت کرکے کشمیری بھائیوں کے ساتھ بھرپور یکجہتی کا اظہار کیا-ریلی کا آغاز بلدیہ آفس سے ہوا جو سکول بازار،مین بازار،کلب روڈ سے ہوتی ہوئی ملت چوک پر اختتام پذیر ہوئی ریلی کے آغاز سے قبل سائرن بجایا گیا اور قومی ترانہ بھی پڑھا گیاریلی کے شرکاء پاکستان زندہ باد،پاک فوک زندہ باد،کشمیر کی آزادی تک جنگ رہے گی جنگ رہے گی،کے فلک شگاف نعرے لگاتے رہے-

شرکاء نے بینرز اور کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر کشمیری بھائیوں سے اظہارِ یک جہتی کے نعرے درج تھے ریلی میں ایس ایچ او سٹی چوہدری فقیر حسین کی قیادت میں پولیس نے سیکورٹی کے فرائض انجام دئیے-ریلی کے شرکا کا کہنا تھا کہ اب وقت آگیا ہے کہ بیانات سے نکل کر ہم کشمیریوں کے لیے عملی اقدامات کریں، کشمیری لوگ بہادر ہیں جو کبھی دشمن کا تسلط برداشت نہیں کریں گے۔ کشمیریوں کی آزادی کے لیے پاکستانی ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں، اس موقع پر طلبہ نے کشمیریوں کے حق میں شدید نعرے بازی کی، شرکا نے کشمیریوں کے حق میں لڑنے کے لیے کسی بھی حد تک جانے کےعزم کا اظہار کیا۔لیاقت پور،خان پور اور ضلع کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں یکجہتی کشمیر ریلیاں نکالی گئیں-

دنیا بھر میں کشمیر پر بھارتی قبضے کیخلاف آج یوم سیاہ منایا جا رہا ہے، جنت نظیر وادی کو جہنم بنے 72 سال گزر گئے تاہم کشمیری آج بھی آزادی کے حق سے محروم ہیں، کنٹرول لائن کے دونوں اطراف احتجاج جاری ہے، پاکستان کا بھی مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی ، شہر شہر ریلیاں اور مظاہرے کئے جا رہے ہیں.
مقبوضہ کشمیر پربھارتی قبضے کو 72سال ہو گئے، کشمیری آج بھی حق سے محروم ہیں۔ 27 اکتوبر 1947 کو بھارت نے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جموں و کشمیر پر قبضہ کیا، آج پاکستان اور ایل او سی کے دونوں جانب کشمیری اس دن کو یوم سیاہ کے طور پرمنا رہے ہیں۔ حریت کانفرنس نے لال چوک کی جانب مارچ کا اعلان کیا ہے، پاکستان میں بھی شہر شہر ریلیاں اور مظاہرے کئے جا رہے ہیں۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے