لاہور کورونا کی تیسری لہر،مریضوں کی تعداد بڑھنے لگی

لاہور(قافلہ نیوز)کورونا وائرس کی تیسری لہر خطرناک ثابت ہونے لگی۔ لاہور میں24گھنٹے کے دوران ریکارڈ 991 نئے مریض رپورٹ ہوئے جبکہ 16 اموات کی تصدیق ہوئی ہے۔تفصیلات کے مطابق لاہور شہر میں کورونا کے مثبت کیسزکی شرح بڑھ کر 10 فیصد تک پہنچ گئی۔ہسپتالوں میں بھی مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے،وائرس سے متاثرہ 365 مریض مختلف ہسپتالوں میں داخل ہیں، 146 آئی سی یو اور 16 مریض وینٹی لیٹر پر ہیں۔چند روز سے کوروناکے مریضوں کی تعداد میں خطرناک حد تک اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ لاہور میں کورونا وائرس کے مزید 991 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ جو رواں برس کے دوران چوبیس گھنٹوں میں سامنے آنے والی سب سے زیادہ تعداد ہے۔ شہر میں کورونا سے 10 اموات رپورٹ ہوئی ہیں ، میو ہسپتال میں 8 ، جنرل ہسپتال اور فاروق ہسپتال میں کورونا وائرس سے ایک ایک مریض دم توڑ گیا۔سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں بھی کورونا کے کنفرم مریضوں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔ ریجنل ٹیکس آفس کے تین افسروں کا کورونا ٹیسٹ مثبت آگیا۔ ریجنل ٹیکس آفس کی عمارت کو سپرے کیلئے خالی کروالیا گیا۔گورنمنٹ گرلز ایلیمنٹری سکول گوہاواں کی طالبہ کورونا کا شکار ہوگئی، طالبہ کو گھر پر قرنطینہ کر دیا گیا ہے۔
ادھر پنجاب میں برطانیہ سے آنے والا نیا کورونا وائرس تیزی سے پھیلنے لگا ہے۔ کورونا وائرس کی دوسری مختلف اقسام کے مقابلے میں، یہ نئی قسم زیادہ تیزی اور آسانی سے منتقل ہورہی ہے۔پنجاب کے صحت کے حکام کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں لاہور، ملتان، فیصل آباد، گوجرانوالہ اور سرگودھا میں 300 مثبت ٹیسٹ آئے جس میں سے 200 مریضوں میں برطانیہ میں پائے جانے والے کینٹ نامی کورونا وائرس پایا گیا۔حکام کے مطابق کورونا وائرس کی نئی قسم تیزی سے پھیل رہی ہے اور لاہور سمیت 5 اضلاع کو ہائی رسک قرار دیا گیا ہے۔ لاہور میں کورونا کے مثبت کیسز کا تناسب 12 فیصد سے بھی بڑھ گیا ہے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے