فریال تالپور14دن کے مزید جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

فریال تالپور کو آج رات کراچی منتقل کرنے کا فیصلہ، گھر سب جیل قرار

ویب ڈیسک : 24جون 2019
اسلام آباد :احتساب عدالت نے سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ اور رکن سندھ اسمبلی فریال تالپور کو 14روزہ جسمانی ریمانڈ پر قومی احتساب بیورو(نیب)راولپنڈی کے حوالے کردیاہے۔
سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کو آج احتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔ عدالت نے 15 جون کو فریال تالپور کومبینہ منی لانڈرنگ کیس میں 9 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کیا تھا۔فریال تالپور کو 9 روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کے روبرو پیش کیا گیا۔
فریال تالپور کے وکیل سردار لطیف کھوسہ نے اپنے دلائل میں کہا کہ نیب علیمہ بی بی کے بارے میں کیا کر رہا ہے؟نیب کا احتساب کا عمل شفاف ہوتا تو علیمہ بی بی کو بھی نوٹس جاری کرتا۔اسی دوران فریال تالپور روسٹرم پر آگئیں اور عدالت کو مخاطب کرکے کہا کہ انکا بلڈ پریشر ہائی رہتا ہے شوگر کی بھی مریض ہیں۔
اس پر احتساب عدالت کے جج نے کہا آپ کا بلڈ پریشر 150/180ہے آپ اپنی نشست پر بیٹھ جائیں۔لطیف کھوسہ نے اپنے دلائل جاری رکھتے ہوئے کہا کہ پارک لین کیس میں فریال تالپور کا کوئی کردار نہیں ہے۔ فریال تالپور پارک لین کپمنی کی ڈائریکٹر نہیں ہیں۔ یہ اومنی گروپ کے جعلی اکاونٹس کا کیس ہے۔ جعلی اکاونٹس کا زمینوں اور شوگر ملز سے کیا تعلق ہے؟سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ نیب والے کیس کی کھچڑی بنارہے ہیں ،چوں چوں کا مربہ بنا رہے ہیں۔
تفتیشی افسر علی ابڑو نے کہا شوگر کین کے معاملات پر فریال تالپور کے موقف کو چیک کر رہے ہیں۔لطیف کھوسہ نے کہا ہم پر تو ہمیشہ سے کیسز بنتے رہے ہیں یہاں تک ہماری خواتین قیادت کوبھی کیسز کا سامنا رہاہے۔ بی بی شہید پر بھی کیسز بنائے گئے، کر لیں جتنا ظلم کرنا ہے ،ہم نے پہلے بیس سال بھی کیسز کو بھگتا ہے۔نیب پراسیکوٹر نے کہا کہ گنے کی سپلائی کے ریکارڈ سے متعلق دستاویزات پر فریال تالپور کا ورژن درکار ہے اسی لیے مزید ریمانڈ درکار ہے۔
فریال تالپور کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ انکی مؤکلہ کو جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار کیا گیا ہے، اس سے زمینوں کا کیا تعلق؟ یہ چوں چوں کا مربعہ بنا رہے ہیں۔تفتیشی افسر نے کہا کہ وہ سمجھنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ گنے ان شوگر ملوں کو بیچے گئے؟ فریال تالپور نے بتایا کہ جو پیسے آتے تھے وہ گنوں کی قیمت کی مد میں آتے تھے۔ ہم اس بیان کی تصدیق کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔عدالت نے دلائل مکمل ہونے پرنیب کی طرف سے فریال تالپور کے مزید ریمانڈ کی استدعا منظور کرتے ہوئے 14دن کے ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر دیا۔

ذرائع کے مطابق نیب نے رکن سندھ اسمبلی فریال تالپور کو آج رات کراچی منتقل کرنے کا فیصلہ کرلیا جبکہ کراچی میں خیابان شمشیر فیز 8 کےگھر کو سب جیل قرار دے دیا گیا ، فریال تالپور سندھ اسمبلی کے بجٹ اجلاس تک کراچی میں موجود رہیں گی۔ نیب کے 3افسر مجبتیٰ خان،افشاں بشارت اورعارفہ خان ساتھ جائیں گے اور سندھ اسمبلی کے اجلاس تک فریال کراچی میں رہیں گی۔
نیب ذرائع کا کہنا ہے فریال تالپور کو پی آئی اے کی پرواز سے شام 7بجے کراچی لے جایا جائے گا، بجٹ کی منظوری تک فریال تالپور کو سندھ اسمبلی لایا جائے گا۔
ذرائع کے مطابق کراچی میں خیابان شمشیر فیز 8 کےگھر کو سب جیل قرار دے دیا گیا اور نیب نے ہاؤس نمبر 19 کو سب جیل قرار دینے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے ، نیب راولپنڈی اورکراچی کےاہلکار سب جیل پر ڈیوٹی دیں گے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے