ورلڈ کپ:محمد عامر 5 میچوں میں 15 وکٹیں لے کر سب سے آگے

ورلڈکپ میں کوئی بھی پاکستانی بیٹسمین ٹاپ ٹین میں جگہ نہیں بناسکا

اسپورٹس ڈیسک : 24جون 2019
لندن : پاکستان کے فاسٹ باؤلر محمد عامر نے ورلڈکپ میں بھرپورواپسی کی ہے ، پانچ میچوں میں پندرہ وکٹیں لے کر ٹاپ پر ہیں ۔ورلڈ کپ اسکواڈ میں محمد عامر کی سلیکشن پر بھی سوالات اٹھے ۔ ٹیم میں شمولیت کے بعد بیماری آڑے آ گئی اور انگلینڈ کے خلاف پانچ میچوں کی سیریز کا ایک میچ بھی نہ کھیل پائے ۔
محمد عامر نے ورلڈکپ میں شاندار پرفارمنس سے اپنی سلیکشن کو درست ثابت کر دیا ہے۔ عامر پانچ میچوں میں پندرہ وکٹوں کے ساتھ بہتر اوسط کے سبب سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بالرز کی فہرست میں سب سے اوپر ہیں ۔
انگلینڈ کے جوفرہ آرچر اور آسٹریلیا کے مچل اسٹارک کی بھی پندرہ پندرہ وکٹیں ہیں لیکن ان کی اوسط زیادہ ہے تو انہوں نے میچز بھی چھ کھیلے ہیں ۔
عامر کی عمدہ پرفارمنس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ پاکستان کے دیگرتمام بالرز نے باون کی اوسط سے اکیس وکٹیں لی ہیں۔اس سے پہلے محمد عامر نے پہلے میچ میں ویسٹ انڈیز کے تین کھلاڑیوں کو پویلین بھیج کر خطرے کی گھنٹی بجا دی تھی ۔ انگلینڈ کے خلاف میچ میں عامر نے دو وکٹیں لیں ۔
پاکستانی لیفٹ آرم فاسٹ بالر محمد عامر نے آسٹریلیا کے خلاف میچ میں پہلی مرتبہ پانچ وکٹیں لینے کا اعزاز حاصل کیا ۔یہی نہیں روایتی حریف بھارت اورجنوبی افریقہ کے میچوں میں بالترتیب تین اور دو وکٹیں لیں۔محمد عامرکے ون ڈے کیرئیر پر نظر دوڑائی جائے تو انہوں نےچھپن میچوں میں انتیس کی اوسط سے پچھتر کھلاڑیوں کو پویلین بھیجا ہے ۔
ورلڈکپ سے پہلے محمد عامر سے متعلق کرکٹ ناقدین کی رائے ملی جلی رہی ۔ابتدا میں محمد عامر کو ورلڈکپ اسکواڈ میں بھی شامل نہیں کیا گیا تھا تاہم وہ حتمی اسکواڈ میں جگہ بنانے میں کامیاب ہو گئے ۔
پاکستان کے دورۂ انگلینڈ میں قسمت نے محمد عامر کا ساتھ نہ دیا ۔ خسرہ کی بیماری میں مبتلا ہونے کے باعث انگلینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز سے باہر ہو گئے ۔

ورلڈکپ میں کوئی بھی پاکستانی بیٹسمین ٹاپ ٹین میں جگہ نہیں بناسکا

ورلڈ کپ کے اب تک کے میچز میں پاکستان کا ایک بھی بیٹسمین ٹاپ ٹین میں جگہ نہیں بنا سکا ہے۔میگا ایونٹ میں قومی ٹیم کے بلے باز بابراعظم 232 رنز کے ساتھ فہرست میں 12ویں نمبر پر ہیں، آسٹریلیا کے ڈیوڈ وارنر 447 رنز کے ساتھ ٹاپ پر ہیں، بنگلہ دیش کے شکیب الحسن 445 رنز کے ساتھ دوسرے اور انگلینڈ کے جوئے روٹ 424 رنز کے ہمراہ تیسرے نمبر پر ہیں۔ آسٹریلیا کے فنچ 396 رنز کے ساتھ چوتھے، نیوزی لینڈ کے ولیمسن 373رنز کے ساتھ پانچویں، بھارت کے روہت شرما 320 رنز کے ساتھ چھٹے، انگلینڈ کے اون مورگن 270 رنز کے ساتھ ساتویں، بھارتی کے ویرات کوہلی ، بنگلہ دیش کے مشفق الرحیم اور آسڑیلیا کے اسٹیو اسمتھ 244 رنز کے ساتھ بالترتیب آٹھویں ،نویں اور دسویں نمبر پر ہیں۔
اب تک کے میچز میں مجموعی طور پر 183 چھکے لگے ہیں، پاکستان کا ایک ہی بیٹسمین ٹاپ ٹین میں جگہ بنانے میں کامیاب نہیں ہو سکا ہے، وہاب ریاض5 چھکوں کے ساتھ فہرست میں بارھویں نمبر پر ہے۔انگلینڈ کے مورگن کو سب سے زیادہ 22 چھکے لگانے کا اعزاز حاصل ہے، آسٹریلیا کے فنچ 16 چھکوں کے ساتھ دوسرے جب کہ ویسٹ انڈیز کے کرس گیل 10 چھکوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہیں۔ بھارت کے شرما، نیوزی لینڈ کے ولیمسن، انگلینڈ کے جوئے رو ٹ، بنگلہ دیش کے شکیب الحسن ، آسٹریلیا کے وارنر اور بھارت کے دھون کو دو، دو سنچریوں بنانے کا اعزاز حاصل ہے۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے