تشدد پر ایس ایچ او کو بلیک لسٹ کردیا جاۓ گا،آئی جی

ویب ڈیسک | 09ستمبر2019
لاہور:آئی جی پنجاب پولیس کی طرف سے صوبہ بھر کےپولیس افسروں کو جاری مراسلے میں کہا گیا ہے کہ تشدد،غیرقانونی حراست یا بداخلاقی پر آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، تشدد چاہے تفتیش والے کریں یا آپریشن والے ذمے دار ایس ایچ او ٹھہرے گا۔
آئی جی پنجاب پولیس نے کہا کہ حراست میں تشدد، موت اورغیرقانونی حراست پر ایس ایچ او ذمے دار ہوگا، علاقے کا ایس ایچ او ذمہ دار ٹھہرانے کے ساتھ بلیک لسٹ کردیا جائے گا، بلیک لسٹ ایس ایچ او کو کسی بھی جگہ پوسٹنگ نہیں دی جائے گی۔
اس سے قبل گزشتہ روز آئی جی پنجاب پولیس عارف نواز کی زیرصدارت پولیس تھانوں میں ملزمان کے تشدد اور ہلاکت کے معاملے پر سینٹرل پولیس آفس لاہور میں ویڈیو لنک کانفرنس ہوئی تھی۔
یاد رہے کہ لاہور کے تھانہ شمالی چھاؤنی میں پولیس کے تشدد سے ہلاک ہونے والے نوجوان عامر مسیح پر تشدد کی سی سی ٹی وی ویڈیو منظر عام پر آئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے اسپتال کے سامنے بھی اس پر تشدد کیا، سادہ کپڑوں میں ملبوس 2 پولیس اہلکار عامر مسیح کو موٹرسائیکل پر طبی امداد کے لیے اسپتال لائے۔سی سی ٹی وی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ عامر کو موٹرسائیکل سے اتارا گیا تو وہ نیچے گرگیا، عامر کے گرنے کے باوجود بھی اسے لاتوں سے مارا گیا اور پھر دونوں اہلکار اسے گھیسٹ کر اسپتال کے اندر لے گئے۔پولیس تشدد سے جاں بحق ہونے والے 25 سالہ عامر مسیح کو چوری کے الزام میں گزشتہ ہفتے تھانہ شمالی چھاؤنی بلایا گیا تھا جہاں 4 روز تشدد کرنے کے بعد 2 ستمبر کو نازک حالت میں صدر کینٹ کے نجی اسپتال میں لایا گیا تھا۔کچھ روز قبل رحیم یارخان میں پولیس تشدد سے اے ٹی ایم کارڈ چوری کا ملزم صلاح الدین بھی دم توڑ گیا تھا جبکہ وہاڑی کے علاقہ لڈن میں پولیس کی طرف سے خاتون پر تشدد اور پاکپتن میں بابا فرید الدین مسعود گنج شکر کے عرس پر ایس ایچ او کی طرف سے زائرین سے بدتمیزی اور تشدد کی ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد سے عوامی اور سماجی حلقوں کی طرف سے پولیس کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور صوبے میں تھانہ کلچر کی تبدیلی اور پولیس اصلاحات کا مطالبہ زور پکڑ چکا ہے۔یاد رہے کہ دو روز قبل صلاح الدین کے والد نے بھی وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کے ساتھ ملاقات میں پولیس اصلاحات کا مطالبہ کیا تھا۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے