پنجاب میں یکم اپریل سےجزوی لاک ڈاؤن کا اعلان،شادی کی تقریبات پر مکمل پابندی

لاہور:پنجاب میں کورونا کی شرح تشویشناک حد تک بڑھنے کے باعث صوبے میں یکم اپریل سے تمام انڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر پابندی کا اعلان کیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا اپنی ٹیم کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اس وقت ہم کورونا کی تیسری لہر کا مقابلہ کر رہے ہیں جو پہلے سے زیادہ خطرناک ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پنجاب میں کورونا مثبت کیسز کا تناسب 14 فیصد ہو چکا ہے جبکہ لاہور میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مثبت کیسز کی شرح 21 فیصد شرح رہی جو انتہائی تشویشناک ہے، کورونا کیسز کی وجہ سے اسپتال تیزی سے بھر رہے ہیں اور ہیلتھ سسٹم دباؤ کا شکار ہے۔عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ مکمل لاک ڈاؤن کے متحمل نہیں ہو سکتے، ہم صنعتوں اور کاروبار کی بندش کے حق میں بھی نہیں ہیں، ہم معاشی سرگرمیوں پر کسی قسم کی پابندی نہیں لگا رہے لیکن ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کرنا ہو گا۔وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ یکم اپریل سے شادی سمیت ہر قسم کی انڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور جن علاقوں میں مثبت کیسز کی شرح 12 فیصد سے زائد ہو گی وہاں لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا گیا ہے، 11 اپریل تک لاک ڈاؤن برقرار رہے گا تاہم سات روز بعد دوبارہ صورت حال کا جائزہ لیا جائے گا۔عثمان بزدارکا مزید کہنا تھا کہ صوبے میں ہر قسم کی اسپورٹس، کلچرل اور دیگر تقریبات پر پابندی ہو گی جبکہ دکانوں اور بازاروں کے اوقات کار شام 6 بجے تک ہوں گے اور بازار ہفتے میں دو روز بند رکھے جائیں گے۔ اس کےعلاوہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے لیکن پرائیویٹ ٹرانسپورٹ ایس او پیز کے ساتھ چلتی رہے گی۔
وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے عوام سے ماسک پہننے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم نے احتیاط نہ کی تو صورتحال مزید خراب ہو سکتی ہے، حکومت بھی ایس او پیز پر عمل درآمد کروانے کے لیے کوشاں ہے لیکن عوام کے تعاون کے بغیر یہ ممکن نہیں ہے۔
ادھرنیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے ملک بھر میں ان ڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر پابندی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔این سی او سی کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق ایسے شہر یا اضلاع جہاں تین دن تک مسلسل کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 8 فیصد یا اس سے زیادہ ہو گی وہاں 5 اپریل سے شادی کی تقریبات پر مکمل پابندی عائد ہو گی تاہم صوبے مقامی صورتحال دیکھتے ہوئے پابندی کا جلد فیصلہ بھی کر سکتے ہیں۔نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ تمام اِن ڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر بھی فوری طور پر پابندی نافذ العمل ہو گی جب کہ این سی او سی 29 مارچ سے صوبوں کو لاک ڈاؤن کے نفاذ کے لیے کورونا کا ‘ہاٹ اسپاٹ نقشہ’فراہم کرے گی۔

Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے